تحصیل اٹھارہ ہزاری کے پانچویں و آٹھویں کے 36ہونہار طلباء کو وظائف نہ مل سکے

Print Friendly, PDF & Email

جھنگ(تحصیل رپورٹر)تحصیل اٹھارہ ہزاری کے پانچویں و آٹھویں کلاس کے36 ہونہار بچوں کو وظائف نہ مل سکے،بچوں کے والدین ڈیڑھ ماہ سے محکمہ تعلیم کےدفتر کے چکر لگا لگا کر تھک گئے سکالر شپ فنڈزمل جانے کے باوجود عملہ مسلسل ٹال مٹول کر رہا ہے والدین نے الزام لگایا ہے کہ ان سے مختلف بہانوں سے فی کس دو سے تین ہزار روپے ایڈوانس رشوت طلب کی جا رہی ہے بتایا گیا ہے کہ پانچویں اور آٹھویں میں نمایاں کارکردگی دکھانے والے36طلباء میں 6سرکاری سکولوں جبکہ30طلباء کا تعلق روڈو سلطان کے ایک ہی پرائیوٹ سکول سے ہے جن کے سکالر شپ کی مد میں تقریبآ 5لاکھ70روپے کی رقم ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر(مردانہ) اٹھارہ ہزاری کے اکاؤنٹ میں 30جون سے ٹرانسفر ہو چکی ہے مگر ابھی تک یہ رقم طلباء کو نہیں دی گئی اس بارے میں ڈپٹی ڈی ای او محمد زاہد نے رابطہ کرنے پر مذکورہ فنڈز مل جانے کی تصدیق کی تاہمان کا کہنا تھا کہ دفتری عملے کی کمی اور ان کے ایک کلرک کی رخصت کی وجہ سے وظائف کی تقسیم میں تاخیر ہو ئی ہے اب بہت جلد یہ رقم طلباء کو فراہم کر دی جائے گی۔

Short URL: http://tinyurl.com/zz9xh9c
QR Code: