میرا شہر لہو لہو ہے

Print Friendly, PDF & Email

(شاعرہ: نادیہ خان )


میرا شہر لہو لہو ہے،
ہر طرف خون بہا ہے،
نہ جانے ظالموں نے
کس بات کا بدلہ لیا ہے،
ماں نے کہا تھا گندے انکل تو سکولوں میں آتے ہیں،
علم کے دشمن ہیں وہ،
بچوں کو پڑھنے کی وجہ سے مارتے ہیں
مگر آج تو اتوار ہے نہ،
سکول سے چھٹی کا دن
چلو آج پارک چلتے ہیں
بے خوف ہو کے کھیلنا تم،
جھولے بھی جھولنا تم،
ایسا کرتے ہیں سبکو لیکر چلتے ہیں
مگر یہ کیا ہوا؟
کیوں ہنسی مذاق کا میدان چیخوں سے گونج اٹھا؟؟
آج تو سکول بھی نہیں گیا میں،
پھر کیوں ہم پہ حملہ ہوا؟؟؟
کوئی تو بتائے ہمیں،
کوئی تو جینے کا حق دلائے ہمیں،
کہ ہمیں بھی جینا ہے

Short URL: http://tinyurl.com/zw57tsm
QR Code:


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *