شاعری: فرح بھٹو

غزل: برسوں بعد تجھ سے ملاقات خوب رہی

برسوں بعد تجھ سے ملاقات خوب رہی وصل کی از سر نو شروعات خوب رہی ایک چھتری برستا ساون تو اور میں کل شب جو برسی برسات خوب رہی تیرے دل کی گفتگو میری دھڑکن نے سنی خاموشی میں ہوئی