٭ پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی ٭

توبہ کے مسافر (آخری حصہ)

Prof. M. Abdullah Bhatti

میں حیرت کے شدید جھٹکوں سے گزر رہا تھا میرے قلب و باطن میں بھونچال سا آگیا تھا میں حیرت سے ساتھ آئے جاگیر داردوست کو دیکھ رہا تھا کہ یہ تم مجھے کہاں لے کر آگئے ہو

توبہ کے مسافر (حصہ دوئم)

Prof. M. Abdullah Bhatti

مجھے لگا جیسے بہت سارے خطرناک زہریلے بچھوؤں کو میرے جسم پر ڈنک مارنے کے لیے چھوڑ دیا گیا ہو یا مجھے قیمہ بنانے والی مشین میں ڈال دیا گیا ہو روزانہ میرے پاس مختلف قسم کے لوگ اپنے مسائل

توبہ کے مسافر

Prof. M. Abdullah Bhatti

میں روزانہ کی طرح آج بھی اپنے دفتر پہنچا تو حسب ِ معمول چند لوگ مختلف گروپوں میں اِدھر ادھر میرے انتظار میں تھے آنے والے مختلف بنچوں اور ٹولیوں میں اِس انتظار میں تھے

آخر کب تک (حصہ دوئم)

Prof. M. Abdullah Bhatti

مجھے سینکڑوں دکھی لاچار اور بے بس بچیوں کے چہرے یاد آرہے تھے جو پتہ نہیں کب سے اپنی آنکھوں میں امید کے دیپ جلائے انتظار کے صحرا میں ننگے پاؤں چل رہی ہیں

آخر کب تک

Prof. M. Abdullah Bhatti

میرے سامنے کانچ کی گڑیا جیسی نرم و نازک دھان پان سے تقریبا 22سالہ نو جوان لڑکی بیٹھی تھی جو بار بار ایک ہی فقرا دہرا رہی تھی سر میں انسان نہیں ہو ں کیا، میں Hurt نہیں ہو تی

نظام قدرت

Prof. M. Abdullah Bhatti

بڑی سی سفید چادر میں لپٹی خو برو خوش شکل عورت جس کی عمر پچاس سال کے قریب ہو گی میرے سامنے آکر بیٹھ گئی اس کی سفید دودھیا مخر وطی انگلیوں میں سچے موتیوں کی تسبیح گر دش کر

غوث پاک ؒ کا خطاب

Prof. M. Abdullah Bhatti

Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab Ghous Pak Ka Khataab تحریر: پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی تاریخ ِ انسانی

شاہ بغداد غوث پاک ؒ

Prof. M. Abdullah Bhatti

Shah Baghdad Ghous Pak RA Shah Baghdad Ghous Pak RA Shah Baghdad Ghous Pak RA Shah Baghdad Ghous Pak RA Shah Baghdad Ghous Pak RA تحریر: پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی خا لقِ ارض و سما نے حضور سیدنا غوث الاعظم،

خدا تیرے بھید نرالے

Prof. M. Abdullah Bhatti

Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale Khuda Tere Bhaid Narale تحریر: پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی خالقِ کائنات نے

روحانی فیض

Prof. M. Abdullah Bhatti

بزمِ تصوف راہ فقر تلاش حق روحانی مسافروں کے لبوں پر ہر سانس کے ساتھ ایک سوال بار بار مچلتا ہے کہ میرا روحانی فیض کدھر ہے کس بزرگ آستانے مزارپر جاؤں کونسی ریاضت مجاہدہ تزکیہ نفس کے کڑے مجاہدوں