Monthly Archives: December 2014

ارفع کریم سے ملا لہ یو سف زئی تک۔۔۔۔ تحریر : ایس ایم عرفان طا ہر

مرے ندیم مرے ہم سفر مرے محسن ! ۔۔۔۔ ترے فراق نے بخشا ہے ذوق دار و رسن تمہا ری یا د میں پھولوں کے ہا ر مرجھا ئے ۔۔۔۔ اڑالیا ہے خزاؤں نے آج رنگ چمن موجودہ صدی کے

فاروق آباد: ڈاکو دوکاندار سے ڈیڑھ لاکھ نقدی اور موبائل فون لے کر فرار

فاروق آباد: محلہ گورونانک پورہ میں 4 ڈاکو تاجر محمد رفیق کی دوکان سے ڈیڑھ لاکھ روپے نقدی اور بھاری مالیت کے موبائل فونز لے کر فرار ہو گئے۔  680 total views

شیخوپورہ: ڈاکوؤں نے مزاہمت پر مل کا چوکیدار قتل کر دیا

شیخوپورہ: فیصل آباد روڈ پر علی الصبح قصبہ بھکھی کے قریب تین ڈاکوؤں نے مزاہمت کرنے پر ٹیکسٹائل مل کے چوکیدار سید نواب کو تشدد کر کے ہلاک کر دیا اور فرار ہو گئے۔ بھکھی پولیس نے مل کے ایڈمن

لاہور: الحاج زبیر احمد گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کا استقبال کرتے ہوئے

لاہور: مسلم لیگ ن ٹریڈ ونگ پنجاب کے جنرل سیکرٹری الحاج زبیر احمد گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کا استقبال کر رہے ہیں۔  881 total views

لاہور: آخری دہشت گردکے صفایا تک اپریشن ضربِ عضب جاری رہے گا:الحاج زبیر احمد

لاہور: حکومت نے دہشت گردی مکمل طورپرختم کرنے کا عزم کررکھاہے آخری دہشت گردکے صفایا تک اپریشن ضربِ عضب جاری رہے گا ان خیالات کااظہارمعروف سماجی رہنما ،مسلم لیگ ن ٹریڈرز ونگ پنجاب کے جنرل سیکرٹری الحاج زبیر احمدنے اپنے

پنکی سے بے نظیر تک۔۔۔۔تحریر: عقیل خان

۔27 دسمبر2007کا دن پاکستان کی تاریخ میں نام کرگیاکیونکہ اس دن پہلی مسلمان خاتون وزیر اعظم اور ہر دلعزیزلیڈر محترمہ بینظیر بھٹو کوشہید کردیا گیاتھا ۔ ان کی شہادت کا دکھ آج تک عوام نہیں بھولی۔ مجھے یا د ہے

اب تو سوچ بدلیں کہ دنیا بدل گئی ۔۔۔۔ تحریر: ایم سرور صدیقی

نہ جانے وہ کون تھا؟میں تو نام بھی نہیں جانتا مجھے یقین ہے آپ بھی یقیناًاس سے واقف نہیں ہوں گے لیکن اس کے خیال نے دنیا کو بدل کررکھ دیا۔بجپن میں نے بھی شوق سے پڑھی اور سنیں آپ

دل لہو لہو ہے۔۔۔۔ تحریر: حسیب اعجاز عاشرؔ

ظالم درندے آگئے ہستی کے باغ میں۔۔آنکھیں ہیں اشک بار، ہے منظر لہولہو کس نے بہایا خون ہے ننھے فرشتوں کا۔۔اے پھولؔ ! ہو گیا ہے پشاور لہو لہو یہ سانحہ پشاور کی داستانِ دلفگاراتنی وحشت ناک ہے کہ تاریخِ

خود اعتمادی اورآپ کی صلاحیتیں۔۔۔۔ تحریر: فرحین ریاض

اپنی شخصیت کو اُجاگر کرنے کے لئے خود اعتمادی سے کام لیں۔ پچھلے دنوں مجھے ایک میل موصول ہوئی جس کے ایک ، ایک لفظ سے درد مندی اور تاسف کا اظہار ہوتاتھالکھنے والی ایک لڑکی تھی، جو نفسیاتی الجھنوں

بی بی کی شہادت ،نقصان عظیم تھا ۔۔۔۔ تحریر: فیصل شامی

کل بھی بھٹو زندہ تھا آج بھی بھٹو زندہ ہے ،، جی ہاں دوستوں یہ وہ الفاظ ہیں جو محترمہ بے نظیر بھٹو نے اپنی شہادت سے قبل لیاقت باغ میں زور شور سے نعروں کی صورت میں لگائے ،،