عورت بھی ایک انسان ہے

Print Friendly, PDF & Email

تحریر: ماریہ شبیر گجرات
عورت بھی ایک انسان ہے اور بھی ویسے پیدا ہوتی جیسے لڑکا ہوتا ہنستی کھیلتی روتی ہے پر لگتا عورت مشین ہو سپنے دفن کرنے کی عورت ہے تو ماں ہے عورت ہے تو بیٹی ہے عورت ہے تو بیوی ہے عورت ہے تو باہو ہے پر بیٹی پیدا کوئی بھی نہیں چاہتا وہی زمانے لوٹ رہے جب بیٹا نہ ہونے پر طلاق جیسا ظالم لفظ لڑکی کو سنا دیا جاتا ہے اِس میں عورت کا کیا قصور ہے سب اللہ کے ہاتھ میں وہ بہتر جانتا ہے کیے گئے فیصلے یہاں لڑکی کو کہاں جاتا پاؤں میں سنگلی ڈالی منہ پر ہاتھ رکھا اور رُخصت کی بیٹی کا یہی حق نہیں کے بس رُخصت کرنا اُسے پیار دینا بھی ماں باپ کا مکمل حق ہے بیٹی کو ہی کیوں کہا جاتا اہ نہ کر لبوں کو سی بزورگوں کا ہے فیصلہ قبر میں ہو دفن بیٹی کو بھی اسلام نے حق دیا ہے پھر بیٹیوں حق نہیں دیئے جاتے ہیں جب بات ہوتی ہے تو بیٹی کو یہ ضرور کہا جاتا حضرت فاطمہ جیسا بنو اور بیوی کو کہاں جاتا حضرت خدیجہ جیسا بنو پر کوئی حضرت محمد ﷺجیسا باپ نہیں بنتا کوئی حضرت محمدﷺجیسا شوہر نہیں بنتا کیوں؟ حساب اگر عورت کا تو مرد کا بھی بیٹی کا تو بیٹے کا بھی ہی بیوی کا تو شوہر کا بھی ہی بہن کا ہے تو بھائی کا بھی عورت کھلونا نہیں ہے کے استعمال کیا پھینکا اسلام عورت کا جتنا اُتنا مرد کا بھی ہی یہ کہا جاتا لڑکی ایسے کپڑے ڈالے لڑکی ایسی ہی تو اتنا ہی تو آپ نگاہیں نیچے رکھیں جس آیت میں لڑکی کو پردے کا حکم اُس سے ایک آیت پہلے لڑکے کو نگاہ نیچے رکھنے کا حکم ہے

Short URL: http://tinyurl.com/y37n2ygt
QR Code:


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *