داؤد خیل: گورنمنٹ ہائرسیکنڈری سکول داؤدخیل میں سول ڈیفنس کی تربیت

Print Friendly, PDF & Email

داؤدخیل: زمین سے آسمان تک پہنچانے والا اُستاد اور پڑھی لکھی ماں ہی تبدیلی کا باعث بنتی ہے۔ آگِ نمرود کو بجھانے کے لیے ہر شخص کو اپنے حصے کا پانی ڈالنا ہوگا۔ ہم دہشت گردوں کا کتاب وقلم سے مقابلہ کریں گے۔موجودہ حالات میں ہم سب بارڈر پر کھڑے سپاہی کی مانند ہوشیار ہونا پڑے گا۔یہ باتیں ڈی ای او سیکنڈری مختیار سندھیلہ نے گزشتہ روز گورنمنٹ ہائرسیکنڈری سکول داؤدخیل میں سول ڈیفنس کی تربیت کے دوران کالاباغ، ماڑی انڈس، پکی شاہ مردان، داؤدخیل اور ٹھٹھی وغیرہ کے ہائی سکولز کے مرد و خواتین اساتذہ سے خطاب کے دوران کہیں۔ انہوں نے کہاکہ بائیس ایس او پیز پر مشتمل ایجنڈا کو بارہ جنوری تک تمام سکولز مکمل کرلیں۔ چھ فٹ سے چھوٹی دیوار نہیں ہونی چاہیے۔ خار دار تار کی باڑ بھی ضروری ہے۔داخلی گیٹ صرف ایک استعمال ہوگا۔ ایمرجنسی گیٹ صرف ایمرجنسی کے لیے ہوگا۔پچاس سے زائد طلبہ بیک وقت چھٹی کے وقت باہر نہ نکلیں۔چالیس میٹر قریب تک کوئی غیر متعلقہ شخص یا گاڑی وغیرہ نہ آئے۔چار دیواری کے اندر باہر پانچ میٹر تک کوئی درخت نہیں ہونا چاہیے۔ اے کیٹگری کے سکولز میں سی سی ٹی وی کیمرہ بھی نصب کیے جارہے ہیں۔ ڈی ای او نے کہاکہ ہمارے پاس طلبہ کی صورت میں سب سے بڑی فوج، افرادی قوت، اساتذہ کی شکل میں بڑی سوچ موجود ہے۔ اس لیے ہم خود پربھروسہ کرکے اس دہشت گردی کا مقابلہ کریں گے۔انہوں نے کہاکہ پانی کے استعمال پر کڑی نظر رکھی جائے۔ واٹر ٹینکی اور کولر وغیرہ کو روزانہ اچھی طرح چیک کیاجائے۔واٹر ٹینک پر لاک والا ڈھکن لگاہو۔ بم ڈسپوزل سکواڈ کے اہلکار محمد خالد خان نے کہاکہ سکول میں پڑی ہر چیز پرنظر رکھی جائے۔ ٹِن کے ڈبے، تازہ کھدائی والی جگہ ، تار یا ایریل کا زمین میں نصب نظر آنا خطرے کی علامت ہوتاہے۔ نامعلوم سکول بیگ، کھلونے، کچرے کے ڈبے وغیرہ کی صورت میں آئی ای ڈی ہوسکتی ہے۔طالب علم کی شکل میں بھی دہشت گرد پہنچ سکتاہے۔ حاضر دماغی سے ہی ہم ان پر قابو پاسکتے ہیں۔ پرنسپل ملک ساعِد رسول نے کہاکہ43 سال بعد ایک بار پھر سولہ دسمبر کو پاکستانی قوم کو خون کے آنسو رلا دیاگیا۔مگر یہ واقعہ سے ہمارے طلبہ ،اساتذہ اورپوری قوم میں متحد ہونے کا جذبہ بیدار کرگیا۔ اس قربانی کی برکت سے ہمارے طلبہ میں نظم و ضبط مزید بڑھ گیاہے۔ افتخار احمد خان نے تلاوت اور یعقوب خان نے نعت کی سعادت حاصل کی۔گورنمنٹ ہائی سکول پکی شاہمردان کے ہیڈماسٹر جاوید اقبال ملک، ماڑی انڈس ہائی سکول کے ہیڈماسٹر رجب حسین، ٹھٹھی ہائی سکول کے ہیڈماسٹر میاں شاہد، ایس ایس عارف خان،سیدصادق حسین شاہ، محمد رفیع آبی و دیگر درجنوں مرد و خواتین اساتذہ اس تربیتی ورکشاپ میں شریک ہوئے۔

Short URL: http://tinyurl.com/jgxyqpu
QR Code:


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *