خلائی جہاز اڑنے کے فوراً بعد ہی تباہ ہو گیا

Print Friendly, PDF & Email

امریکی کمپنی سپیس ایکس کی جانب سے بین الاقوامی خلائی سٹیشن پر بھیجا جانے والا راکٹ گر کر تباہ ہو گیا ہے۔ یہ راکٹ امریکی ریاست فلوریڈا کے علاقے کیپ کیناورل سے خلا میں روانہ کیا گیا لیکن بغیر پائلٹ کے خلا میں بھیجا جانے والا ’فیلکن نائن‘ اڑنے کے کچھ ہی دیر بعد ہوا میں پھٹ کر تباہ ہو گیا۔ اس راکٹ کے ذریعے بین الااقوامی خلائی سٹیشن پر رسد بھجوائی جا رہی تھی۔ امریکی کمپنی سپیس ایکس کی خلا میں راکٹ بھیجنے کی یہ تیسری کوشش ہے جو ناکام ہوئی۔ اس سے قبل جنوری اور اپریل میں بھیجا گیا راکٹ بھی سمندر میں گر گیا تھا۔ خلا میں راکٹ بھیجنے کا تجربہ ٹی وی پر براہ راست دکھایا جا رہا تھا۔امریکہ کے خلائی ادارے ناسا کے مبصر نے کہا کہ ’راکٹ پھٹ گیا ہے۔ بظاہر لگتا یہ ہے کہ ہمارا تجربہ ناکام ہوا ہے۔ اس وقت یہ نہیں بتایا جا سکتا کہ تجربہ کیوں ناکام ہوا۔‘ راکٹ کے پرواز کرنے کے کچھ ہی دیر بعد دھماکہ ہوا۔ سپیس ایکس کے مبصر کا کہنا تھا کہ یہ راکٹ سپر سونک رفتار تک پہنچ گیا تھا لیکن اس سے پہلے کہ رسد لے جانے والا جہاز راکٹ سے الگ ہونے اور مدار میں داخل ہونے کے مرحلے میں پہنچتا کسی وجہ سے کچھ ہوا اور وہ تباہ ہو گیا۔
سائنسی امور پر بی بی سی کے نامہ نگار جوناتھن آموس کا کہنا ہے کہ ’اگر یہ تجربہ کامیاب ہو جاتا تو یہ راکٹ کے موجودہ نظام میں انقلاب برپا کر سکتا تھا۔‘ سپیس ایکس کا کہنا ہے کہ یہ وہ محتاط انداز میں راکٹ کو دوبارہ خلا میں بھیجے گا تاکہ خلا تک رسائی حاصل کرنے کی لاگت کو کم کیا جا سکے۔

(بشکریہ: بی بی سی اُردو)

Short URL: http://tinyurl.com/gwo7e5j
QR Code:


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *