جماعت اسلامی استقامت و ایمانی جرات کا نام ہے: ڈاکٹر عبدالرزاق

Print Friendly, PDF & Email

داؤدخیل (ذوالفقارخان)فرد کمزور اور قومیں لمبی عمر سے مضبوط ہوتی ہیں۔ جماعت اسلامی چوہتر سال کی ہوگئی سمجھو یہ مضبوط بنیادوں پراستوار ہوچکی ہے۔مسلمان قوم کی بناوٹ ہی باقی تمام اقوام سے منفرد ہے۔ جماعت اسلامی استقامت و ایمانی جرات کا نام ہے۔ یہ باتیں جماعت اسلامی کے راہنما ڈاکٹر عبدالرزاق نیازی نے گزشتہ روز اسلامیہ ہائی سکول داؤدخیل میں جماعت اسلامی کے یومِ تاسیس کے سلسلہ میں منعقدہ تقریب کے شرکا ء سے خطاب کے دوران کہیں۔ انہوں نے کہاکہ مولانا مودودی دراصل حضرت شاہ ولی اللہ کی سوچ اور فکر کا تسلسل ہیں۔ نظریہ پاکستان کو سمجھنا ہے تو اس کے لیے مولانا مودودی کی کتاب مسئلہ قومیت پڑھنی چاہیے۔انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی بچوں، بڑوں، بزرگوں اور مرد و خواتین سبھی کے لیے شعبہ جات قائم کررکھے ہیں۔ یہ مولانا مودودی کی سوچ کا نتیجہ ہے کہ آج بھی مقبوضہ کشمیر ہو یا بنگلہ دیش، مصر ہو یا ترکی ہر جگہ جماعت اسلامی کے اراکین جرات و استقامت کا نشان بنے کھڑے ہیں۔ جماعت اسلامی تعلیمی میدان میں بھی کھڑی ہے اور کسانوں کے شانہ بشانہ بھی کھڑی ہے۔ جماعت اسلامی مزدوروں کی ہم آواز بھی ہے اور سیاست کے میدان میں بھی کرپشن سے پاک اپنی منفرد حیثیت منوا چکی ہے۔ایوب خان کی درخواست پر 1965ء کی جنگ کے دوران ریڈیو پاکستان پر مولانا مودودی کا جہاد پر بیان اہلِ پاکستان کے جذبہ کو نئی مہمیز عطا کی اور پاکستان فتح سے ہمکنار ہوا۔پاکستان کا مطلب کیا لکھنے پڑھنے کے سوا ایک دھوکا ہے ، ہم پاکستان کی نظریاتی حدود کی حفاظت کریں گے۔ہمارا مسئلہ صاحب مال نہیں صاحب کردار سے حل ہوگا۔ معروف سکالر الطاف حسین کلو نے کہاکہ اسلام کی تاریخ اور بعد کے مسلمانوں کی تاریخ مختلف چیزیں ہیں۔اسلام کا نظریہ حیات اور ہمارے نظریہ حیات میں فرق واقع ہوچکاہے۔ مولانا مودودی نے اسلام اور مسلمانوں کو ہم آہنگ کرنے کی تحریک پورے درددِ ل سے شروع کی۔ ہم نے ہزار سال دُنیا کو بہت کچھ دیا مگر پچھلے پانچ سو سال سے ہم بھکاری بن چکے ہیں۔قرآن کی روح سے ہم مسلمان ہیں۔ جماعت اسلامی فرقہ بندی کے سخت خلاف جماعت ہے۔انہوں نے کہاکہ میں نے جماعت اسلامی اوپرسے لے کر وارڈ کی سطح تک باصلاحیت اور دیانتدار قیادت مہیا کرنے کی توفیق سے مالا مال ہے۔نائب صدر عبداللہ خان نے کہاکہ پچھتر افراد کا لگایا ہوا پودا آج دُنیا کے کونے کونے میں لگ چکاہے۔ جماعت اسلامی فرقہ واریت کے بجائے صرف اور صرف قرآن و سنت کی بات کرتی ہے۔تقریب سے منیب الرحمن چغتائی نے بھی خطاب کیا۔ تلاوت مولانا محمد طاہر اوراختتامی دعامولانا عبدالطیف خان نے کرائی۔ یومِ تاسیس کی اس تقریب میں سابق ڈی ای او عبدالغفور خان، سابق ہیڈماسٹر حبیب اللہ خان خدرخیل، ماہر تعلیم ظفر اللہ جمالی، ظفراللہ خان، شیرعلی خان، معظم شہزاد، محمد سعید اعظمی، محمد حفیظ اعظمی، گل شیرخان، محمد ممتاز، نعمت اللہ خان کلرک، عبدالمجیدخان کلرک، محمد یونس خان، انعام اللہ خان، حفیظ اللہ قریشی، ضیا نیازی، تنویر عابد، امجد مقبول ملک، عبدالرشید خان اور حسن فاروق خان سمیت درجنوں افراد شریک ہوئے۔

Short URL: http://tinyurl.com/jgl9dx7
QR Code:


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *