اسلامی جمہوریہ پاکستان۔۔۔۔ تحریر: یاسر رفیق

Yasir Rafiq
Print Friendly, PDF & Email

پاکستان ہم سب کا ہے کوئی بلوچی سندھی پنجابی اور پختون نہیں اس میں بسنے والے سب پاکستانی ہیں یہ ملک بے بہا قربانیوں کے بعد حاصل کیا گیااس ملک کے بانی قائداعظم محمد علی جناح کو اللہ نے بیشمار خوبیوں سے نوازاپاکستان کا حصول زمین کے ایک ٹکڑے کاحصول نہیں تھابلکہ بقول قائداعظم یہ تجربہ گاہ اس لیے قائم کرنا چاہتے تھیکہ جہاں مسلمان اسلامی اصولوں کو آزما سکیں اسلامی جمہوریہ پاکستان کابنیادی مقصد مذہبی آزادی اور دو قومی نظریہ تھا کیونکہ بت پرستی اور توحید خالص ایک ساتھ نہیں چل سکتے تھے مگر افسوس کہ 68 سال گزر جانے کہ بعد آج بھی مسلمان باہمی اختلافات،علاقائی تعصبات اور لسانی تفریق کا شکار ہیں ان چیزوں نے معاشرے کی فضا خراب کر رکھی ہے سی پربس نہیں بلکہ شروع دن سے ہی ملک پاکستان کو دشمنوں نے اپنا ہدف بنا رکھا ہے ہجرت کرتے وقت قتل وغارت ہو یا تقسیم بنگال ہو ‘ڈرون حملے ہوں یا خود کش دھماکے ‘سری لنکن ٹیم پرحملہ ہویاکراچی جیسے بڑے شہر کے امن کو خاک وخون سے نہلا دیا گیا ہو’اغوا برائے تاوان ہو یا واہگہ بارڈر پر خون کی ندیاں بہا دی گئی ہوں’بھارت کی آبی جارحیت ہو یا بلا اشتعال فائرنگ سے ہمارے جوان فوجیوں کی زندگی کے چراغوں کو بجھا دیا گیا ہو’پشاور سکول میں معصوم بچوں پر فائرنگ کر کے ہماری غیرت کو للکارا گیا ہویاریمنڈڈیوس جیسے قاتل کے ہاتھوں3بے گنا ہ مسلمانوں کا قتل عام کیا گیا ہو’ان سب سے دشمن کی عیاری اورمکاری کو سمجھنے میں کوئی دشواری پیش نہیں آتی ان تمام حالات میں پاکستان ایک نازک موڑ پر کھڑاہے نام تو اسلامی جمہوریہ پاکستان رکھ دیا پر اسلامی نظام قائم نہ کر سکے عدل انصاف کی سر عام پامالی کر رہے ہیں ایسا کیوں ہے کسی نے آج تک نہیں سوچا جمہوریت کے رکھوالے جمہوری ایوان میں آتے ہیں صرف نمودونمائش کے لیے۔ان نام نہاد ایوانوں میں نہ کھبی تعلیمی نظام پر بات کی جاتی ہے اور نہ ہی عام آدمی کیلیے۔ میں اور میرے جیسا عام آدمی ایسی جمہوریت کا حامی نہیں۔جب تک صیح معنوں میں اسلامی نظام اور جمہوریت نافذ نہیں ہوتی اس وقت تک امن وامان اور مسائل حل نہیں ہو سکتے مسائل کے حل کے لیے خالص طرز حکمرانی کی ضرورت ہے میں بطور طالبعلم لکھتا رہوں گا پیارے پاکستان کے لیے۔۔ پاکستان کی صحافت کے لیے۔پاکستان کی عوام کے لیے اور عامم آدمی کے لیے۔ یہی میرا مشن ہے۔

 

Short URL: http://tinyurl.com/hx5w2l8
QR Code:


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *