اٹھ جائے تیری ذات سے پھر اعتبار دیکھ

Print Friendly, PDF & Email

شاعر: احمد نثار، ماراشٹر، انڈیا


میرا شکستہ حال میرا انتظار دیکھ
اْٹھ جائے تیری ذات سے پھر اعتبار دیکھ

تیری نگاہِ لطف کا دیرینہ منتظر
کیسے ہوا ہے میرا جگر تار تار دیکھ

اْڑ جائے نہ قفس سے کہیں روح کا پرند
ایسا نہ ہو کہ تو بھی کرے زار زار دیکھ

قدرت میں خوشنمائی کے منظر ہیں بے شمار
تیرے لیے بنائے انہیں بار بار دیکھ

میرا شکستہ دل ہے اسیری میں مضطرب
اس پر ستم کہ بارہا ہوتے ہیں وار دیکھ

اک دل کی زد میں سینکڑوں ظلمات ہیں کھڑے
کیسا ہے دل کا دِل پہ میرے اختیار دیکھ

جشنِ جنون لگتا ہے ہر حادثہ یہاں
عقل و خرد کی مات ہے دنیا نثارؔ دیکھ

889 total views, 2 views today

Short URL: //tinyurl.com/zmmjt2t
QR Code:
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *