٭ شاعری ٭

میرا شہر لہو لہو ہے

اٹھ جائے تیری ذات سے پھر اعتبار دیکھ

میرے سارے رازِ ہستی، کیا بےنقاب تو ہے

رمزِ زندگی

غزل: یوں امتحان لیا خاکداں بنا کے مجھے

ہمیں تم سے محبت ہے

غزل: شاعری نہیں کرتا، شاعری بہانہ ہے

اِک لڑکی تھی دیوانی سی

غزل: جسقدر تلخ ہوں حالات سمبھل کر رہنا

ماں کے نام شہیدبچے کا پیغام