٭ شاعری ٭

مجھے خط ملا ہے غنیم کا

وطن کاگیت

اُسی کے نور سے ہم انحراف کر بیٹھے

نعت شریف

چراغِ مردہ سے امیدِ انقلاب نہیں

اے وطن مری جنت ہے تُو

میرا زندہ اب بھی ضمیر ہے

نعتیہ کلام

نعت شریف

غزل: برسوں بعد تجھ سے ملاقات خوب رہی