’آن لائن گیمز میں دوران 57 فیصد نوجوانوں کو دھمکایا جاتا ہے‘

Print Friendly, PDF & Email

ایک مشاہدے کے مطابق آن لائن گیمز کھیلنے والے 57 فیصد نوجوانوں کو کھیل کے دوران ڈرایا دھمکایا جاتا ہے۔

22 فیصد لوگوں کا کہنا ہے کہ انھوں نے اس طرح کے رویے کے بعد آن لائن گیم کھیلنا ہی چھوڑ دیا۔

ڈچ دی لیبل نامی ادارے کی جانب سے کیے گئے سروے میں 12 سے 25 سال کے 2500 نوجوانوں سے بات کی گئی۔

ایک 16 سالہ گیمر بیلے مچل نے بی بی سی کو بتایا کہ انھیں آن لائن گیمز کھیلنے کے دوران تب سے ڈرایا دھمکایا جا رہا ہے جب وہ صرف 10 سال کے تھے۔

’اگر آپ سکول جاتے ہیں اور وہاں آپ بلیئنگ یعنی ڈرانے دھمکانے والے رویوں کا سامنا کرتے ہیں تو آپ گھر آکر اپنے کمپیوٹر مںی پناہ ڈھونڈتے ہیں۔‘

’لیکن اگر یہاں آپ کا مزید استحصال کیا جاتا ہے اور آپ کو سماجی سرگرمیوں سے الگ کر دیا جاتا ہے۔ یہ بہت سے لوگوں کے ساتھ ہوا ہے جن میں میں خود بھی شامل ہوں۔‘

190 total views, 2 views today

Short URL: http://tinyurl.com/y8bx3d5n
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...