اتحاد بین المسلمین وقت کی اہم ترین ضرورت ہے، مولانا محمد صدیق مدنی

Print Friendly, PDF & Email

مسلمان حکمرانوں کو ایک ملی جذبہ کے تحت تمام مسلکوں کو بالائے طاق رکھ کر ایک قرآن رسول اورامت بن کر سوچنا ہو گا

چمن (بیوروچیف) اتحاد بین المسلمین وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ اگر مسلم امہ نے اب بھی یکجہتی اور توحید کے پرچم کو نہ تھامہ تو پھر باریاں تو لگی ہوئی ہیں ایک ایک کر کے تمام مسلم ممالک پر اہل کفر کی یلغار جاری ہے۔ ان خیالات کا اظہار جمعیت علماء اسلام حلقہ بوغرہ سٹی چمن کے سرپرست مولانا محمدصدیق مدنی نے کیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب، ایران اور پاکستان تین ایسے مسلم ممالک ہیں جو اہل کفر کی آنکھوں میں کانٹا بن کر چُبھتے ہیں۔ عراق، لیبیا اور شام کو، جو کہ تینوں مسلم ریاستیں تھیں، تباہ و برباد کر کے رکھ دیا گیا ہے۔ اہل باطل کی کامیابی یہی ہے کہ وہ امت مسلمہ میں نفرت کا زہر گھول کر کامیابی کے جھنڈے گاڑتے چلے جا رہے ہیں اور امت بیچاری عراق، ایران جنگ سے لیکر فلسطین، بوسنیا، لیبیا، کشمیر،افغانستان، مصر، لبنان، برما، یمن اور اب شام کے مسلمانوں پر درندگی پر بھی مسلمان حکمرانوں کے رویئے پر کڑھتے اور آگ بگولا دکھائی دیتے ہیں۔ مولانا محمدصدیق مدنی نے مزید کہا کہ افسوس کہ امت مسلمہ کے حکمرانوں کو یہ احساس نہیں ہو پا رہا کہ ’’قرآن کریم میں اللہ کے فرمان کے مطابق اہل کفر کبھی تمہارے دوست نہیں‘‘ یہ آپس میں ہی ایک دوسرے کے دوست ہیں اور ہم پھر بھی آپس میں ہی دست و گریبان ہیں، آج یہ بات سمجھ میں بخوبی آتی ہے کہ ہٹلر نے یہودیوں کی نسل کشی کیوں شروع کی تھی۔ اسے اس بات کا بخوبی علم تھا کہ یہی دنیا میں امن کے دشمن اور فساد کی جڑ ہیں۔ مولانا محمدصدیق مدنی نے مزید کہا کہ غورطلب بات یہ ہے کہ مسلمان حکمرانوں کو ایک ملی جذبہ کے تحت تمام مسلکوں کو بالائے طاق رکھ کر ایک قرآن، ایک رسول، ایک امت بن کر سوچنا ہو گا۔ اتحاد میں بڑی طاقت اور اخوت ہے۔ کوئی قوم اقوام عالم کی نظر میں عزت آبرو، وقار و احترام کا مقام نہیں پا سکتی جب تک اس میں یکجہتی اور ہم آہنگی نہ پائی جائے۔

84 total views, 1 views today

Short URL: //tinyurl.com/y6h69a5s
QR Code:
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *