وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خان خٹک اور چیف سیکرٹری آمنے سامنے

Print Friendly, PDF & Email

چیف سیکرٹری نے ڈی سی کے تبادلے سے انکار کردیا جبکہ وزیر اعلیٰ نے ایگزیکٹو آرڈر جاری کرنے کا عندیہ دیا


پشاور (سٹی رپورٹر) ڈپٹی کمشنر مالاکنڈ اور پاکستان تحریک انصاف میں شدید اختلافات کے باعث وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خان خٹک اور چیف سیکرٹری آمنے سامنے ہوگئے چیف سیکرٹری نے ڈی سی کے تبادلے سے انکار کردیا جبکہ وزیر اعلیٰ نے ایگزیکٹو آرڈر جاری کرنے کا عندیہ دیا ۔ملاکنڈ سے تعلق رکھنے والے ممبر صوبائی اسمبلی وزیر اعلیٰ کے مشیر شکیل خان نے اپنا استعفیٰ احتجاجاًتحریر کرلیا ہے جبکہ اسپیکر صوبائی اسمبلی اسد قیصر بھی تحریک انصاف کے کارکنوں کی حمایت میں کود پڑے ہیں ۔انتہائی باخبر ذرائع سے معلوم ہواہے کہ گذشتہ دنوں مالاکنڈ کے علاقہ ٹنڈیل میں ایف سی اہلکاروں کی جانب سے مقامی بیوہ خاتون کے ساتھ چھیڑ خانی اور بدتمیزی سے پیدا ہونے والے تنازعہ میں ڈپٹی کمشنر مالاکنڈ خائستہ رحمان اور اسسٹنٹ کمشنر بٹ خیلہ اشفاق احمد کی جانب سے جانبداری اور متاثرہ خاتون کے رشتہ داروں کو جیل بھیجنے اور بعدازاں ضمانت دینے سے انکار پر پی ٹی آئی کے سینئر رہنما ضلع کونسلر سبحان گل کے ساتھ تکرار اور انہیں سات گھنٹے تک تھانہ بٹ خیلہ کے حوالات میں بند کرنے کے خلاف تحریک انصاف کے ایم پی اے وزیر اعلیٰ کے مشیر شکیل خان اور ممبر قومی اسمبلی جنید اکبر خان نے سات دن کے اندر اندر ڈپٹی کمشنر اور اسسٹنٹ کمشنر کے تبادلے کی ڈیڈلائن دی تاہم ڈیڈلائن گذرنے کے بعد ضلع کونسلر سبحان گل نے دیگر تحصیل اور ویلیج ناظمین کے ہمراہ مالاکنڈ پریس کلب بٹ خیلہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا اور گو ڈی سی گو ، گوچیف سیکرٹری گو کے نعرے لگاتے ہوئے تین دن کے اندر ان کے تبادلے کے لئے دوبارہ ڈیڈلائن دی تاہم مظاہرہ کے بعد ڈی سی نے مظاہرین کے خلاف انسدادی دہشت گردی کے تحت مختلف دفعات
506/7ata.353.186.143.147.149
کے ذریعے ایف آئی آر درج کرلی اور رات گئے ان کے گھروں پر چھاپے ماریں جس کے خوف سے ضلع کونسلر سبحان گل ، تحصیل کونسلر جمال حسین ،سکندر حیات ،فیض محمد ، وزیر محمد ، مختیار ، شاہد ، آمیر خان اوروزیر زادہ سمیت دیگر درجن بھر افراد وزیر اعلیٰ ہائوس پہنچ گئے جہا ں وزیر اعلیٰ سے ملاقات کے دوران وزیر اعلیٰ نے چیف سیکرٹری امجد علی کو ڈپٹی کمشنر اور اسسٹنٹ کمشنر کے تبادلے کا حکم دیا تاہم چیف سیکرٹری نے صاف انکار کیا ہے اطلاعات کے مطابق وہ ابھی تک وزیر اعلیٰ ہائوس میں بیٹھے ہیں ادھر بیوہ خاتون کی شکایت پروزیر اعلیٰ نے ڈی سی اور اے سی کے خلاف صوبائی انسپکشن ٹیم کے چیئرمین اختر علی شاہ کی نگرانی میںتحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی ہے جنہوں نے جمعرات کے روز مالاکنڈ آکر ڈی سی اور اے سی کے بیانات سمیت تھانہ مالاکنڈ میں درج ایف آئی آر کی کاپی حاصل کرکے واپس پشاور پہنچ گئے ہیں جو آئندہ چند دنوں میں اپنی رپورٹ مکمل کرکے وزیر اعلیٰ کو پیش کریں گے ذرائع کے مطابق ڈپٹی کمشنر چیف سیکرٹری کے انتہائی قریبی ہونے کی وجہ سے وزیر اعلیٰ کے احکامات کے باوجود ڈپٹی کمشنر کے تبادلہ میں روڑے اٹکار رہے ہیںدوسری طرف تحریک انصاف کے ایم پی اے شکیل خان اور متاثرہ بلدیاتی نمائندوں نے اپنے استعفیٰ احتجاجاً تحریر کرلیا ہے جو کاروائی نہ ہونے کی صورت میں وزیر اعلیٰ کو پیش کریں گے ۔

1,007 total views, 2 views today

Short URL: //tinyurl.com/zhpt3fw
QR Code:
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *