Posts By: Imran Ahmed Rajput

مائکروفکشن…ضرورتِ رشتہ

سولفظی کہانی…ضرورتِ رشتہ تحریر: عمران احمد راجپوت ہمارے پاس کافی لڑکیوں کے رشتے ہیں آپ کو کس طرح کا رشتہ درکار ہے… دیکھیں مجھے شریف گھرانے کی پڑھی لکھی لڑکی کا رشتہ چاہئیے…جو خوبصورت ہونے کے ساتھ ساتھ سگھڑ بھی

مائکروفکشن… خوف

مائکروفکشن… مختصر ترین افسانہ تحریر: عمران احمد راجپوت عنوان: خوف…! اُس کی آنکھیں ایک ہی سمت ٹِک ٹِکی باندھے مسلسل مجھےتکے جارہی تھیں…جیسے مجھ سے کچھ کہنا چاہتی ہوں. نجانے کیوں ایسا معلوم دے رہا تھا کہ میں اسے جانتا ہوں.

مائکروفکشن… کلچر

مائکروفکشن…مختصرترین افسانہ افسانہ نگار: عمران احمد راجپوت عنوان: کلچر تم نے دیکھا یونیورسٹی کی لڑکیوں کو… توبہ اللہ کی پناہ لگ ہی نہیں رہا تھا یہ سب ہمارے معاشرے کا حصہ ہیں… سب انگریزی میں گِٹ پِٹ گِٹ پِٹ کررہےتھے

اختیارات

مائکروفکشن… مختصر ترین افسانہ عنوان: اختیارات تحریر: عمران احمد راجپوت صحافی… سَر کیا پورا کراچی دہشت گرد یے…؟ جواب… نہیں صرف ایک نمائندہ جماعت صحافی…نمائندہ جماعت… کس کی جواب… متوسط طبقے کی صحافی… تو کیا متوسط طبقہ دہشتگردی کو سپورٹ

شادی کس سے کریں…

  تحریر: عمران احمد راجپوت عنوان: شادی کس سے کریں…! اللہ رب العزت نے مرد عورت کو فطری جذبات کی تسکین اور نسلی ارتقاء کے حصول کیلئے شادی جیسے بندھن میں باندھ کر ایک جانب خواہشاتِ نفسانی کی جائز طریقے

مائکروفکشن…بھوکے ننگے

مائکروفکشن… مختصر ترین افسانہ تحریر: عمران احمد راجپوت عنوان: بھوکے ننگے   دھڑا دھڑ تالے لگائے جارہے تھے… سب لوگ بہت خوش تھے جیسے برسوں کی تمنا پوری ہونے جارہی ہو کوئی واہ واہ کوئی مبارکاں کوئی سٹھو کیو تو

مائکروفکشن… قوم پرست

مائکروفکشن… مختصر ترین افسانہ تحریر: عمران احمد راجپوت عنوان: قوم پرست   قوم کے باشعور ایک جگہ جمع ہوئے…اور حقوق کی بات کرنے لگے اب کوئی چپ نہیں رہے گا…کسی کی حق تلفی نہیں ہوگی سب کو برابری کی سطح

یومِ کشمیر منانے سے کام نہیں چلے گا… جواب دینا ہوگا

تحریر : عمران احمد راجپوت ویسے تو 68 سالوں سے بھارت کے زیرتسلط کشمیری عوام اپنے جگر گوشوں کی لاشیں اٹھاتے اور بھارتی مظالم سہتے آرہے ہیں جبکہ وقتاً فوقتاً اپنے اوپر ہونے والے ظلم کے خلاف آواز حق بھی بلند

مائکروفکشن…. امام

مائکروفکشن… مختصر ترین افسانہ تحریر : عمران احمد راجپوت عنوان: امام اسلامی یکجہتی کانفرنس میں مقررین اپنے پرجوش خطابات سے لوگوں کے جذبہ ایمانی کو جگا رہے تھے. یہ کیا انسانیت انسانیت  کرتے پھرتے ہیں….لوگوں دنیا میں واحد انسانیت کا