Posts By: M. Arshad Qureshi

کچرا جلانے پر پابندی عائد کی جائے۔

ایک اچھی انسانی صحت کیلئے کھلی اور صاف ہوا میں سانس لینا ضروری ہے، مگر اس دور جدید میں صاف ہوا میسر نہیں، اِس کی وجہ ماحولیاتی آلودگی ہے۔آجکل کے دورِ جدید میں انسان آلودہ ماحول میں زندگی گزارنے پر

بے موسم چھٹیاں

دنیا بھر میں موسم کی تبدیلی شروع ہوچکی ہے جس کے اثرات پاکستان میں بھی واضح دکھائی دے رہے ہیں پچاس سال میں نہ صرف  دنیا بھر میں موسم تبدیل ہوجاتے ہیں بلکہ موسم کی تبدیلی کی مناسبت سے معمولات

غریب پینشنراور پی ٹی سی ایل انتظامیہ کی ہٹ دھرمی

پاکستان ٹیلی گراف اینڈ ٹیلی فون  (ٹی اینڈ ٹی ) موجودہ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن کمپنی لمیٹیڈ  کہلانے والی  کمپنی جو  مختلف  بہانوں سے اپنے غریب ریٹائیرڈ ملازمین کی پینشن کو ناجائز طریقے سے روکے ہوئے ہے  ہر سال بجٹ میں

یوم سقوط جونا گڑھ

ریاست جوناگڑھ جو چار  ہزار میل پر مشتمل ہے۔ یہ سمندر کے راستہ کراچی سے صرف دو سو میل کے دوری پر ہے۔ تقسیم ہند کے وقت یہاں نواب مہابت خانجی کی حکومت تھی۔ انہوں نے 15 ستمبر 1947 کو

لاک ڈاؤن سے کول ڈاؤن ۔

گذشتہ  کئی دنوں سے میڈیا  ،سوشل  میڈیا پر دو نومبر کے لاک ڈاؤن کی دھوم مچی ہوئی تھی  میڈیا نے بھی خوب زوردار تیاریاں کی تھیں ، ٹی وی ٹاک شوز، بریکنگ نیوز، براہ راست نیوز کی خوب بہار آئی

رہائی بعد از پھانسی

ہم اکثر ضمانت قبل از گرفتاری یا ایوارڈ بعد از مرگ کے الفاظ سنتے ہیں ، لیکن رہائی بعد از پھانسی کا لفظ شائید کئی قارئین کے لیئے نہ صرف نیا ہو بلکہ کسی اچھنبے سے کم نہ ہو کہ

بکری اور پردہ

سو لفظ ایک کہانی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بکری اور پردہ وہ کسی کام کے سلسلے میں پاکستان آیا تھا گو کہ مسلمان نہیں تھا لیکن  اسلام میں پردے کے بارے میں بہت کچھ سنا  تھا   وہ  راستے میں  دیکھی  ان بکریوں کا

مودی نے بھارت کو تماشہ بنا دیا

نریندر مودی شائید بھارت کے پہلے وزیر اعظم ہیں جنھوں نے بھارت کو سب سے زیادہ نقصان پہنچایا ہے ، بھارت جو کہ اس روئے زمین پر  پہلے ہی ایک تنہا ہندو ملک ہے  اسے اس کے اپنے ہی وزیراعظم

دیوار سندھ رنی کوٹ حکومتی توجہ کی منتظر۔

یو نیسکو  دیوار سندھ کے طور پر مشہور رنی کوٹ کو عالمی ورثہ قرار دینے کی تجویز رکھتا ہے مگر دنیا کا سب سے بڑا قلعہ حکومت کی لاپروائی اور اہلکاروں کی کوتاہی کی وجہ سے لاوارثی کی جیتی جاگتی

شارع فیصل کراچی کو چوڑا کرنا ہوگا۔

گذشتہ دنو ں حکومت سندھ کی جانب سے  ٹریفک پولیس کی ایک نئی فورس تشکیل دی گئی جو کہ شارع فیصل کراچی میں ٹریفک کی روانی کو یقینی بنائے گی ساتھ ہی شارع فیصل پر رکشوں اور ہیوی لوڈ گاڑیوں