٭ پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی ٭

مایوسی ہی کیوں

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی وہ میرے سامنے رونی صورت بنائے پچھلے ایک گھنٹے سے بیٹھا تھا اور مایوسی رونے پیٹنے کی باتیں کیے جا رہا تھا ۔ میں بار بار اس کو حوصلہ اور ہمت دینے کی کوشش کر رہا

فوجی

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی رات کا آخری پہر بھی دھیرے دھیرے سرک رہا تھا ‘ سارے لوگ نرم و گداز بستروں میں دبکے سو رہے تھے لیکن میں کوہ مری کی گلیات میںپہاڑ کی چوٹی پر صحت افزا ٹھنڈے مقام

عاشق رسول ﷺ

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی عاشقانِ رسول ﷺ کے اِس گلدستے میں ہر پھول کی خوشبو تازگی اور خوبصورتی نرالی ہے اِس گلدستے میں ایک پھول ایسا ہے جس کی معطر خوشبو سے کائنات کا کونہ کونہ مہک رہا ہے ۔یہ

ماہ رمضان اور عید

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی بلا شبہ عید با عثِ مسرت بھی ہے اور لمحہ فکریہ بھی صدیوں سے ہما رے آبا اجداد نے نہ جا نے کتنی عیدیں منائی ہیں اور روز محشر تک اہل اسلام منا تے رہیں گے

بیورو کریسی کی پھرتیاں

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی ہر دور کی بیورو کریسی حکمرانوںکے کامیاب فارمولہ وزٹ کر نے کی چئمپین ہے کسی ایم این اے یا وزیر کو جب کبھی حکمران کے قریب ہو نے یا ذاتی کام نکلوانے کا دورہ پڑتا ہے

داماد رسول

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی قریش مکہ کے مظالم سے تنگ آکر رحمتِ دو جہاں ﷺ مکہ سے ہجرت فرما کر مدینہ تشریف لے گئے ۔ اہلِ مکہ مہاجرین مدینہ منورہ میں پر دیسی تھے اِس لیے رسول دوجہاں ﷺ نے

افطار ڈنر

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی سیاہ عبائے میں خود کو ڈھانپ کر دو دھیا سفید چہرے کے ساتھ جوان غمزدہ خوبصورت پڑھی لکھی لڑکی اداس بھیگی نظروں کے ساتھ بیٹھی تھی ‘اُس کا باطنی کرب اُس کے چہرے اور آنکھوں سے

محلے دار

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی شاندار لذیز مزے دار افطاری ‘ ٹھنڈے شیریں مشروبات ‘ فروٹ چاٹ ‘پکوڑے ‘ سموسے ‘ ویجیٹیبل رول ‘ دہی بھلے ‘اور پھر نمازکے بعد لذیز اشتہا انگیز فل آف پروٹین کھانا کھانے کے بعد الائچی

زوجہ رسول ﷺ

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی عرب کی سب سے امیر اور باوقار خاتون آرام فرما رہیں تھیں خواب میں ایک روح پرور نظارہ دیکھتی ہیں کہ آسمان سے آفتاب ان کے گھر کے آنگن میں اتر آیا ہے اس کے نور

یار سخی

تحریر:پروفیسر محمد عبداللہ بھٹی اپریل کی صبح اپنا ایک خاص جادو رکھتی ہے آج کی صبح بھی نیم خنک جمیل پہاڑی جھرنوں کی شبنمی پھوار جیسی تھی اپریل آدھے سے زیاد ہ گزر چکا تھا لیکن پھر بھی موسم میں