٭ کالمز و آرٹیکلز ٭

قانون کی حکمرانی سے تجاوزات تک

تحریر :ملک ممریز خان ایک وقت تھا جب ہم چھوٹے بچے تھے گاؤں سے شہر تک اکثر لوگ پیدل سفر کرتے اور کچھ لوگ تانگہ میں بیٹھ کر شہر جاتے اور اُن میں بعض لوگ سپیشل تانگہ کرتے کہ تمام

الیگزینڈر یا حضرت عمر

تحریر : حافظ محمد قیصر ،کراچی ﮨﻢ ﻧﮯ ﺑﭽﭙﻦ ﻣﯿﮟ ﭘﮍﮬﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﻘﺪﻭﻧﯿﮧ ﮐﺎ ﺍﻟﯿﮕﺰﯾﻨﮉﺭ 20ﺳﺎﻝ ﮐﯽ ﻋﻤﺮ ﻣﯿﮟ ﺑﺎﺩﺷﺎﮦ ﺑﻨﺎ۔ 23 ﺳﺎﻝ ﮐﯽ ﻋﻤﺮ ﻣﯿﮟ ﻣﻘﺪﻭﻧﯿﮧ ﺳﮯ ﻧﮑﻼ، ﺍﺱ ﻧﮯ ﺳﺐ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﭘﻮﺭﺍ ﯾﻮﻧﺎﻥ ﻓﺘﺢ ﮐﯿﺎ، ﺍﺱ ﮐﮯ

سرائیکستان نہیں صوبہ ملتان بنائیں ؟

تحریر: ظہور دھریجہ ۔11 فروری 2017ء کے خبریں میں ایک کالم ’’ لسانیت کے نام پر تقسیم قبول نہیں ‘‘ کے عنوان سے ارشد رحمان کے نام سے شائع کرایا گیا ، یہ در اصل وہی مضمون ہے جو رانا

بحریہ کی کثیر القوی!امن مشقیں

تحریر : رانا اعجاز حسین پاکستان 2007ء سے ہر دوسرے سال اتحادی ممالک کے ساتھ ملکر امن مشقوں کا انعقاد کرتا ہے، جس کا مقصد سمندری خطرات و دہشت گردی سے نمٹنے کی صلاحیتوں کے مظاہرے کے ساتھ ساتھ شرکاء

کچرا جلانے پر پابندی عائد کی جائے۔

ایک اچھی انسانی صحت کیلئے کھلی اور صاف ہوا میں سانس لینا ضروری ہے، مگر اس دور جدید میں صاف ہوا میسر نہیں، اِس کی وجہ ماحولیاتی آلودگی ہے۔آجکل کے دورِ جدید میں انسان آلودہ ماحول میں زندگی گزارنے پر

بچوں میں منشیات کا بڑھتا ہوا رحجان

تحریر: اقراء ضیاء ،کراچی گزرے دنوں کا قصہ ہے249 ایک خوبصورت روز تھا.ہر کوئی حضورﷺ کی وِلادت کی خوشیاں منا رہا تھا. ہر طرف بچوں کی چہل پہل اور ہر معصوم چہرے سے خوشی جھلک رہی تھی249 اسی دوران دروازے

بقاء کی تگ و دو

تحریر: شفقت اللہ دور حیات ایک ایسا لفظ ہے جو زندگی کی مکمل تاریخ پر احاطہ کئے ہوئے ہے اور اس کو سمجھے بغیر نہ تو انسان بلکہ دنیا میں موجود جتنی بھی مخلوقات ہیں زندہ نہیں رہ سکتیں ۔یہاں

کراچی کی ٹریفک اور موٹر سائیکل

تحریر: شیخ خالد ذاہد انسان نے ترقی کیلئے سب سے پہلے وقت کو لگامیں ڈالنے پر کام کیا اور وقت کے استعمال کو اہمیت دی یعنی کم وقت میں زیادہ سے زیادہ کا کیا جاسکے۔ جہاں انسان نے وقت کو

طلباء یونینوں کے انتخابات کیوں ضروری

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری ۔1984ء میں مارشل لاء دور کے دوران ہی طلباء یو نین انتخابات پر پابندی عائد کی گئی تھی کہ کہیں طلباء متحد ہو کر فوجی ڈکٹیٹر ضیاء الحق کو ہی نہ اتار پھینکیں اس کے بعد

ہمیں رسم و رواج نے جکڑ لیا ہے

تحریر: افضال احمد رسم صرف اس بات کو نہیں کہتے جو نکاح اور تقریبات میں کی جاتی ہیں بلکہ ہر غیر لازم چیز کو لازم کر لینے کا نام رسم ہے خواہ تقریبات میں ہو یا روز مرہ کے معمولات