٭ ندیم رحمٰن ملک ٭

نمازِجُمعہ! خوشی عبادت اور قبولیت کا دن۔۔۔۔ تحریر : ندیم رحمن ملک

اللہ تبارک و تعالیٰ نے پانچ وقت کی نماز ہر مسلمان پر فرض کی ہے،جسکی کسی بھی صورت میں چھوٹ نہیں ہے،اسی طرح نمازِجمعہ پڑھنا بھی عین فرض ہے، اس سے انکاری اللہ جل و جلالہ کے ہاں کسی صورت

نماز، قرآن، ذکرِ الٰہی اور دعا!۔۔۔۔ تحریر: ندیم رحمن ملک

وہ انسان انتہائی خوش نصیب اورکامیاب قرار دیا جائے گا جو اپنے دن کا بیشتر وقت اللہ سبحان و تعالیٰ کو یاد کرتے گزارتا ہے، چاہے وہ نماز پڑھتا ہے، چاہے وہ قرآن کی تلاوت کرتا ہے،یا زبان سے تسبیح

نمازِجُمعہ! خوشی، عبادت اور قبولیت کا دن۔۔۔۔ تحریر : ندیم رحمن ملک

اللہ تبارک و تعالیٰ نے پانچ وقت کی نماز ہر مسلمان پر فرض کی ہے،جسکی کسی بھی صورت میں چھوٹ نہیں ہے،اسی طرح نمازِجمعہ پڑھنا بھی عین فرض ہے، اس سے انکاری اللہ جل و جلالہ کے ہاں کسی صورت

باجماعت نماز کی انوار و برکات۔۔۔۔ تحریر : ندیم رحمن ملک

ہر وقت نماز کی طرف متوجہ رہنے والوں کے لیے ایک عظیم الشان بشارت اور خوشخبری ہے۔قیامت کے دن جب کہیں کوئیسایہ اور چھاوں نہیں ہوگا۔۔ تب اللہ عزوجل اپنی رحمت اور عافیت کا سایہ جن نیک لوگوں پر کرئے

ارباب نشاط۔۔۔۔ تحریر : ندیم رحمن ملک، مظفر گڑھ

تخلیق کار کب کس کی سنتا ہے؟۔۔تخلیق کار کی کب کون سنتا ہے؟لکھنے والا اور پڑھنے والا دونوں ایک دوسرے سے آجکل شاکی اور قدرے معاصرانہ چشمک رکھتے ہیں۔ہمارے ملک میں اتنے لکھنے والے نہیں،جتنے پڑھنے والے موجود ہیں،کتابیں نہ

ہارن آہستہ بجائیں قوم سو رہی ہے۔۔۔۔ ندیم رحمان ملک

نیند کسے پیاری نہیں ہوتی۔۔خواب کسے اچھے نہیں لگتے۔۔بقول منیر نیازی خواب دیکھنا اچھی بات لیکن خوابوں میں رہنا کوئی اچھی بات نہیں۔ملک میں رہنما کوئی ہے نہیں اور قوم نہ صرف مزئے سے سو رہی ہے بلکہ خواب در

جمشید دستی کے الزامات\”اے خاک نشینو اٹھ بیٹھو..؟\”۔۔۔۔ ندیم رحمن ملک

یہ ان دنوں کی بات ہے جب پرویز مشرف نے اپنے اقتدار کو طول دینے کی غرض سے یورپ سے مستعار لیا بلدیاتی نظام متعارف کرایا،مظفرگڑھ سے ضلعی ناظم کا الیکشن سابق وزیر دفاع عبدالقیوم جتوئی نے سلطان محمود ہنجرا

فن اور تحریر کے تھر میں!!..۔۔۔۔ ندیم رحمن ملک

فنون لطیفہ محض موسیقی،بت تراشی اورتصورکشی تک محدود نہیں ہے،بلکہ صحافت،نفسیات،مذہب، سیاست، فلسفہ،تہذیب و تمدن،تاریخ و ثقافت،زبان و ادب اورسائنس و طب کے علوم کا نام ہے،بہت خوش قسمت ہیں وہ لوگ جو ان علوم پر دسترس رکھتے ہیں،اور وہ

خودنمائی کالنڈا بازا ر۔۔۔۔ ندیم رحمان ملک

دیکھا جائے تودنیا کے تمام بازار میں ،ہر شعبہ ہائے جات میں لوگ جن کاموں میں جٹے ہیں بلاآخر اسکی تان خود حضرت انسان کی ذاتی تسکین اور خودنمائی پر ٹوٹتی ہے۔لوگ اپنے کاموں پر داد،تحسین،واہ واہ اور سہرائے جانے

کیا ڈیجیٹل ورلڈ کو نظر انداز کیا جا سکتا ہے؟۔۔۔۔ ندیم رحمان ملک

دنیا بھر کی طرح پاکستان بھی سوشل میڈیا جسے آج کل ڈیجیٹل ورلڈ بھی کہا جاتا ہے، کی اہمیت ، اس کی اثر پذیری اور ضرورت کو تعلیم یافتہ طبقہ کب کا تقسیم کر چکا ہے۔ لفظ “پراپیگنڈہ”کا اگر نیا