٭ منشاء فریدی ٭

قوم پرستی۔۔ ریاست کے استحکام کے لیے ضروری ہے

تحریر : منشاء فریدیایک اخباری خبر ہے کہ “برطانوی نشریاتی ادارے کی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ بھارت میں” قوم پرستی” کا جوش عام شہریوں کو جعلی خبریں پھیلانے کی تحریک دیتا ہے۔تحقیق میں پتا چلا ہے

پولیس کا یہ رویہّ بھی آزادی اظہار پر حملہ تصور ہوگا

تحریر : منشاء فریدیاس وقت مجموعی طور پر پاکستان بالخصوص بلو چستان اور کے کی کے اور پنجاب راجن پور اور ڈیرہ غازیخان کے اضلاع میں ’’صحافی‘‘ /کالم نگار شدید ترین مسائل کا شکار ہوتے ہوئے غیر محفوظ ہیں ۔

۔’’مناجات معصومین‘‘ کی تقریب رونمائی

تحریر : منشاء فریدیادبی تقاریب وسیب میں مثبت رویوں کا باعث ہیں۔یہ تقاریب ہمارے عمومی سماجی اور اجتماعی رویوں کے عروج کیلئے محدودمعاون ثابت ہوتی ہیں ۔وہ معاشرہ جمہور کا شکار ہو کر فناء کے گھاٹ اتر جاتا ہے۔جہاں ثقافتی

وسیب دا سانجھا بیانیہ’’احمد خاں طارق‘‘

تحریر :منشاء فریدیسرائیکی وسیب وچ کلچرڈہے۔ اتھوں دے ادب وچ ورتیے استعار تے تشبیہات ایندے آپنے ہن۔ پھوگ ،لئی ،لانڑیں ،جال کرینہیہ،ڈیلھے،پیلھوں تے کانہہ وغیرہ نویکلیاں وسیبی سوکھڑیاں ہن۔جیندے اتے سرائیکی ادب تے ثقافت کوں پھوت چھکدی کھڑی ہے۔اج ا

نوید صبح

تحریر :منشاء فریدی ساجد !شہر ڈو ونج ،مگر شرط ہے ایہا سینہ جے میڈی جان! زمانے دا صاف ہے ہمارے وسیب ،ہماری دھرتی اور ہمارے خطے کے عا لمگیرشاعر فرید ساجد کا یہ شعر عکاس ہے ان جذبات کا، عکاس

دلائل و براہین کو ’’ بحث و نظر ‘‘ کا حصہ بنائیے!۔

تحریر: منشاء فریدی کسی بھی معاصرروزنامہ کے لیے ضروری ہے کہ وہ علاقائی ، قومی اور بین الاقوامی سطح پر جاری ابحث کوغیر جانبدارانہ انداز میں شائع کرے کیونکہ یہی حسن صحافت ہے ورنہ کوئی بھی جریدہ اپنا وقار کھو

قومی اسمبلی کا اجلاس اور ہماری وزارت داخلہ

تحریر: منشاء فریدی کاش وطن عزیز پاکستان میں امن قائم ہو۔ امیدِ واثق ہے کہ یہ خواہش ایکدن ضرور پوری ہو گی لیکن اس دعاء کو قبولیت تک پہنچنے میں ہمارے ارباب سیاست سب سے بڑی رکاوٹ ہیں ۔ اور

سیاست اور مملکت چلانے کیلئے منافقت نہیں چلے گی

تحریر : منشا فریدی دارورسن کا دور عام ہے۔ سچ کو سُولی پہ لٹکایا جا رہا ہے۔ہر سُو دہشت کی فضا ہے۔ اور دہشت گردی کی تعریف بھی خود ساختہ ہے۔ جس کے تحت شعور مصلوب ہو رہا ہے۔ یہ

سرائیکستان اور نان سرائیکستان‘‘ نقطۂ نظر واضح کریں

تحریر :منشاء فریدی میرے نزدیک قوم کی بنیاد ثقافت ہے ۔ نا کہ مذہب ، نسل ، ریاست ، ملک اور پیشے ۔۔۔۔! جو لوگ یا دانشور یا قبائلی نظام کے پر چار ک جب قومیت کی بنیاد درج بالا

اشتہار ’’تلاش گمشدہ ‘‘ اور اغواء کا مقدمہ

تحریر: منشا ء فریدی ہمیں جس قدر ہمارے ہی سلامتی کے اداروں نے متاثر کیا ہے ۔ شاید ہی کسی اور ادارے میں اس طرح ہم جسمانی سطح پر ذلت کا شکار ہوئے ہو ں ۔ پورے ملک میں جس