٭ گل عرش شاہد ٭

میرا ملک، میرا دیس میرا یہ وطن۔۔۔۔ تحریر: گل عرش شاہد

کہتے ہیں انسان کی پہچان اس کے بات کرنے کے انداز سے ہوتی ہے،اگر وہ اچھے اخلاق کا مالک ہے تو لوگ اسے اچھا انسان سمجھتے ہیں،لیکن اگر وہ برے اخلاق کا انسان ہے اور لوگوں سے بات کرتے وقت

پاکستانی نیوز چینلز، بے شرمی کا مسکن۔۔۔۔ گل عرش شاہد

پاکستان دنیا کا وہ واحد ملک ہے جس کو عالمی ادارے صحافت کے لئے خطرناک ترین ملک تصور کرتے ہیں،اسی ملک میں ڈینئل پرل نامی امریکی صحافی کا قتل ہوا،ولی خان بابر کا قتل بھی قابل ذکر ہے،ویسے تو پاکستان

پاکستان اور سرجیکل اسٹرائیک۔۔۔۔ گل عرش شاہد

کافی عرصے سے میرا ذہن مجھ سے ایک سوال پوچھ رہا ہے کہ یہ جو ملک میں خودکش بم دھماکے ہورہے ہیں ، یہ مسجدوں ،امام بارگاہوں ،بازاروں میں ہی کیوں ہوتے ہیں ۔آج تک یہ کیوں نہیں ہوا کہ

پاک فوج۔ہمارا وقار۔۔۔۔ گل عرش شاہد

کہتے ہیں  کہ کسی بھی ملک کی بقاء کی ضامن عوام کا اپنی فوج پر بھروسہ کرنا ہوتا ہے،یہی وجہ ہے کہ حالت جنگ میں فوج نڈر ہوکر دشمن کے خلاف ایک آہنی دیوار بن جاتی ہے۔دوران جنگ فوج کا

نیوز چینلز میں نوکری کی خواہش۔ مگر سیکیورٹی۔۔۔۔ گل عرش شاہد

ویسے تو ہر مذہب ہی اولاد کی بہترین پرورش کرنے کا حکم دیتا ہے تاکہ وہی اولاد ایک اچھے معاشرے کی بنیاد رکھ سکے ،ایک بچے کی پہلی درسگاہ ماں کی گود ہوتی ہے وہی سے وہ بچہ اپنا پہلا

ماں۔ اک عظیم ہستی ۔۔۔۔ گل عرش شاہد

                کہتے ہیں اللہ نے دنیا میں سب سے اچھی مخلوق انسان کو بنایا انسان دنیا ميں اللہ کا نائب ہے تمام مخلوقات میں اسے اشرف المخلوقات کا لقب دیا گیا ہے، انسانوں کو

جناح کا پاکستان یا طالبان کا پاکستان۔۔۔۔ گل عرش شاہد

یہ میدان ہے لاہور شہر کے اقبال پارک کا،پنڈال مسلمانان ہند سے بھرا پڑا ہے،سب لوگوں کی نگاہیں اس انتظار میں ہیں کہ کب ہمارا عظیم قائد محمد علی جناح تشریف لائیں گے، مسلمانوں کا جذبہ قابل دید تھا،ہر طرف