٭ ڈاکٹر احسان باری ٭

پرانے راگ اور نئے سازندے؟

تحریر: ڈاکٹر میاں احسان باری جنوبی پنجا ب کے چھ قومی اور دو صوبائی اسمبلیوں کے ممبران نے اسمبلیوں سے استعفیٰ دے کر جنوبی پنجاب صوبہ محاذ کے نام سے نئی تنظیم قائم کر لی ہے اس میں سابقہ ریاست

گراں فروشوں کی عید

تحریر: ڈاکٹر میاں احسان باری عید کے معنی ہی خوشی کے ہیں مسلمانوں کے لیے دو عیدین کے تہوار انتہائی انبساط اور خوشیوں کا باعث ہوتے ہیں مگر گراں فروشوں نے تو امسال عید الاضحی کی خوشیوں کو اپنے تئیں

عید قربان پھر آگئی

تحریر ڈاکٹر میاں احسان باری عید قربان مسلمانوں کا وہ تہوار ہے جو کہ حضرت ابراہیم ؑ کی طرف سے خواب میں خدا تعالیٰ کی جانب سے اپنی سب سے پیاری اور قیمتی چیز کو قربان کرڈالنے کے بموجب ان

طلباء یونینوں کے انتخابات کیوں ضروری

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری ۔1984ء میں مارشل لاء دور کے دوران ہی طلباء یو نین انتخابات پر پابندی عائد کی گئی تھی کہ کہیں طلباء متحد ہو کر فوجی ڈکٹیٹر ضیاء الحق کو ہی نہ اتار پھینکیں اس کے بعد

اورپٹرول بم پھر پھٹ گیا

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری نیا سال چڑھتے ہی 15جنوری کو رات ٹھیک بارہ بجے حکومت کا پٹرول کی قیمتوں پر بم نہیں بلکہ ایٹم بم گراڈالنے سے پاکستانی عوام کی چیخیں نکل گئیں اور ان کے لیے سال کا آغازسخت

امریکی زوال اور چینی عروج

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری امریکی الیکشن ہو چکے ٹرمپ کو رو زگار کے معاملے کے ساتھ امریکہ میں علیحدگی پسند تحریکوں سے بھی نمٹنا ہو گا۔ امریکی ریاست کیلیفورنیا میں ٹرمپ کے منتخب ہو نے پر عوام نے شدید رد

سیاسی جماعتوں کے اَباؤٹ ٹرن

تحریر: ڈاکٹر میاں احسان باری پی پی پی والوں کی تقریریں خصوصاً بلاول کا انکل کہہ کر محبتوں کا اظہار وہ بھی ملک دشمن پاکستان مردہ باد کے نعرے لگوانے اور اسے ناسور قرار دینے والے کے لیے نے ملک

یومِ یکجہتئ کشمیر کے تقاضے

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری بلاشبہ5فروری کو یوم یکجہتی کشمیر پاکستان ہی میں نہیں بلکہ عالم اسلام کے بیشتر ممالک میں انتہائی اہتمام سے منایا جاتا ہے اس روز جلسے جلوس سیمینارزکا انعقاد ہوتا ہے میلوں لمبی انسانی زنجیر بنائی جاتی

بجلی کا سیاپا! ذمہ داروں کے منہ پر طمانچہ

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری ازلی دشمن بھارت نے اپنی بڑھکوں کا ندی نالوں کے پانی کو روک کر عملی ثبوت دینا شروع کردیا ہے بارشوں کا سلسلہ شروع نہ ہونے کی وجہ سے بھی دریاؤں میں پانی کی شدید کمی

کیا صرف جعلی ادویات کے لیے عمر قید ہی کافی ہے؟

تحریر:ڈاکٹر میاں احسان باری موجودہ حکومتی کارپردازوں کا یہ کہنا کہ آئندہ جعلی ادویات تیار کرنے والوں کو عمر قید ،ایک کروڑ روپے جرمانہ اور ان کی جائیداد کی بھی ضبطی ہو گی نہ صرف انقلابی قدم ہے بلکہ ایک