٭ عبدالجبار خان دریشک ٭

کبھی یہ بات تنہائی میں سوچیئے گا

تحریر عبدالجبار دریشک ایمزون کے جنگل کے بارے میں کہا جاتا ہے یہ دنیا کا سب سے بڑھ جنگل ہے جو 9 ممالک تک پھیلا ہوا ہے، اس جنگل کے بارے بہت ساری باتیں حیران کن ہیں لیکن سب سے خاص

ہم پلاسٹک کھا اور پی رہے ہیں

تحریر: عبدالجبار دریشک ہماری زیادہ تر روز مرہ استعمال کی اشیاء  پلاسٹک ہی بنی ہوتی ہیں۔ جن کو ہم  استعمال کے بعد پھینک دیتے ہیں یا پھر ہفتہ ، مہینہ ، یا کئی ماہ استعمال کے بعد اس کی جگہ وہی

امریکا اب معاہدے توڑنے کے کارڈ کھیل رہا ہے

تحریر : عبدالجبار دریشک  امریکا ابھی بھی اس سیڑھی سے نیچے نہیں اتر رہا جس پر وہ کھڑا ہو کر ساری سے دنیا اونچا ہو جاتا تھا ، گزشتہ کئی دہائیوں سے وہ دنیا پر اپنی معاشی ،دفاعی طاقت کے

کچھ تو ہونے والا ہے

تحریر :عبدالجبار دریشک  اس وقت عالمی میڈیا پر سعودی شہری جمال خاشقجی کی گمشدگی یا ہلاکت کا معاملہ سرگرم ہے اس معاملے کو امریکا بہت ہی زیادہ سنجیدگی سے لے رہے جمال خاشقجی سعودی عرب کا شہری ہے لیکن وہ

اس مشکل دور میں توانائی متبادل ذرائع پر انحصار کیا جائے

تحریر . عبدالجبارخان دریشک انسان ہمیشہ کھوج میں لگا رہتا اس نے اپنے اردگرد پائی جانے والی چیزوں کو اپنی ضرورت کے مطابق ڈھال کر اپنے لیے آسائش کا سامان پیدا کیا ، آج ہم اس دور سے گزر رہے ہیں

صاحب مزدور کہا ں جائیں۔؟

تحریر: عبدالجبار خان دریشک ماحولیاتی آلودگی اس وقت دنیا کا سب بڑا مسئلہ بن چکی ہے، موسمیاتی تبدیلیوں کے آثرات نمودار ہونے سے انسانوں کے ساتھ کررہ ارض پر جنگلی و آبی حیات کے لیے بھی خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔

شام میں تازہ میز ائل حملوں سے عالمی امن خطر ے میں

تحریر : عبدالجبار خان دریشک  انسان اپنی آنا کی تسکین کو حاصل کر نے کے لئے انسانیت سے خالی ہو جاتا ہے وہ انسانیت کے رشتے کو بھو ل کر حیو انیت پر اتر اتا ہے ‘ اور جب انسان

رانگ نمبربھارتی با با۔۔اب جیل میں

تحر یر : عبدالجبار خان دریشک گرمیت سنگھ عرف با با رام رحیم کو بھارتی عدالت نے طویل ٹر ائل کے بعد آخر کارسز ا سنا ہی دی گرمیت سنگھ نے 23ستمبر 1990 کو ڈیرہ سچا سودا کے نا م

جمعہ ملنگ کی عید اور میڈیا ٹرانسمیشن

تحریر. عبدالجبار خان دریشک عید کے روز قربانی سے فارغ ہو کر دوست احباب اور رشتہ داروں کو گوشت کا حصہ ان کے گھروں کو پہچانے کے بعد بکرے کے سری پائے کھانے کا ارادہ تھا خیال آیا کہ بازار

قوم کی سربلندی کا دن

تحر یر : عبدالجبار خان دریشک قوموں کی تشکیل یکجہتی کی بنیا د پر ہو تی ہے فرد کبھی قوم نہیں بنتے افرا د ہی قو م بنتے ہیں افر اد سے بننے والی قوم کاہر ایک فر د ایک دوسرے