٭ اے آر طارق ٭

نئے شکاری ،لائے جال پرانا

تحریر: اے آر طارقکچھ عرصے سے امریکہ افغانستان سے اپنی افواج کی واپسی کی بات کررہا ہے۔یکم دسمبر 2009ء کو سابق امریکی صدراوبامہ نے ویسٹ پوائنٹ ملٹری اکیڈمی سے خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا کہ ’’ہماری افواج گھر واپس آنا

ہمیں اصل خطرات کس سے؟

تحریر: اے آر طارقپاکستان انتہائی نازک دور سے گزر رہا ہے،کئی سالوں سے افواج پاکستان کو قبائلی علاقوں میں پرائی جنگ کے لیے دھکیل دیا گیا ہے اور دوسری طرف اس کے ساتھ ساتھ پاکستان کے طول وعرض میں گاہے

ذرا سوچیئے

تحریر: اے آر طارق تجھے کیا بتاؤں اے ہم نشینمیرے غم کا قصہ کتنا طویل ہے میرے گھر کی لٹ گئی آبروہوا غیر جب سے دخیل ہے۔تھوڑی سی ترمیم کے ساتھ۔ ۔ ۔تجھے کیا بتاؤں اے ہم نشینمیرے غم کا قصہ

کرپشن کنٹرول

تحریر: اے آر طارق ملک عزیز پاکستان اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم سے ہر طرح کے وسائل سے مالا مال ہے ۔ قدرتی،معدنی ،صنعتی اورزرعی وسائل اس کی پہچان ہیں۔دنیا میں کچھ ایسے ممالک بھی ترقی یافتہ قوموں کی صف

سماج کے ٹھیکیدار

تحریر: اے آر طارق ملک میں جس طرح ’’جنتا سیوک ‘‘حکمرانوں کی بہتات ہے ۔اسی طرح یہاں برسات کے مینڈکوں کی طرح ابھرتے ’’سماج سیوک‘‘افراد کی بھی کوئی کمی نہیں پائی جاتی۔جنتا سیوک حکمرانوں کی طرح یہ سماج سیوک افراد

کامیابی کشتیاں جلا دینے میں

تحریر: اے آر طارق چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس ،جس میں کشمیریوں سے یکجہتی کی قرارداد پاس ہونی تھی کا بائیکاٹ کیا۔وہ آل پارٹیز کانفرنس میں بھی شرکت کے خواہشمند نہ تھے،مگر تحریک انصاف کے

بات تلخ ہے مگر ہے سوچنے کی۔۔۔۔ تحریر: اے آر طارق

تمام ترصورتحال آئینے کی طرح صاف شفاف ہمارے سامنے ہے اور یہ حقیقت روزروشن کی طرح عیاں ہوچکی ہے کہ ایم کیو ایم ملک دشمن جماعت ہے اورغیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث اور بیرونی استعمار کے ایجنڈے پر کام کررہی

ریاستی کمزوری یامصالحانہ پالیسی کا تسلسل۔۔۔۔ تحریر: اے آر طارق

افواج پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی،ڈی جی رینجرز اور آرمی چیف کے حوالے سے سخت زبان کا استعمال ،سنگین نتائج کی دھمکیاں،ملکی سلامتی کے برعکس بیان بازی اور ملکی سلامتی کے اداروں کو مخاطب کرکے کھلا چیلنج دینا،پاکستان مردہ آباد

اوروں کا افسانہ یاد رہا ،اپنا بھول گئے۔۔۔۔ تحریر: اے آر طارق

طاہر القادری نے بھارت میں منہاج القرآن کی خصوصی کانفرنس سے خطاب کیا،جس میں بقول ان کے کہ’’ بھارت والوں نے مجھے خاصی اچھی سیکیورٹی دی،جس پر مودی صاحب مبارکباد اور شکریہ کے مستحق ہیں‘‘طاہر القادری کا اتنا کہنا ہی

اے اللہ اس ارض وطن کے بچوں کو سدا سلامت رکھنا۔۔۔۔ تحریر: اے آر طارق

والدین کی تکلیف اور ان کے چہروں پر عیاں بے بسی اور لاچارگی دیکھی نہیں جا رہی،مائیں ہیں کہ بے بسی ،لاچارگی اور حسرت ویاس کی تصویر بنی بیٹھی ہیں اور ان کے آنسو ہے کہ تھمنے کا نام نہیں