ڈاکٹر شگفتہ یاسمین کی تصنیف ’’ کشفِ ذات ‘‘کا رسم اجراء

Print Friendly, PDF & Email

رپورٹ: ڈاکٹر محمد راغب دیشمکھ
وزیر اقلیتی فلاح وکارگزار صدر اکادمی ڈاکٹر عبدالغفورو دیگر معزز شخصیات کے ہاتھوں کتاب کا رسم اجراء
بہاراردو اکادمی کے زیراہتمام سہ روزہ خواتین اردو قومی کنونشن کے پہلے روز کتاب کا رسم اجراء عمل میں آیا


kashf e zaat by dr shagufta yasmeen

کشفِ ذات

پٹنہ : بہار اردو اکادمی کے زیر اہتمام‘ مقامی اے این سنہا انسٹی ٹیوٹ میں‘ آج پورے تزک واحتشام کے ساتھ وزیر اقلیتی فلاح وکارگزار صدر اکادمی ڈاکٹر عبدالغفور‘ اکادمی کے نائب صدورجناب سلطان اختر وڈاکٹر اعجاز علی ارشد اور خواتین مہمانان ذی وقار کے ہاتھوں باقاعدہ شمع افروزی سے سہ روزہ خواتین اردو قومی کنونشن کا آغاز ہوا۔ اس موقع پر گل پیشی کی رسم بھی ادا کی گئی۔ اس کنونشن کے افتتاحی اجلاس کی صدارت عزت مآب وزیر اقلیتی فلاح ڈاکٹر عبدالغفور نے فرمائی اور نظامت کے فرائض محترمہ ڈاکٹر شگفتہ یاسمین نے انجام دیے۔ استقبالیہ خطاب میں سکریٹری اکادمی مشتاق احمد نوری نے تمام شرکائے محفل کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اکادمی کے عزائم اور منصوبوں پر اجمالاً روشنی ڈالی اور کہا کہ وزیر اقلیتی فلاح کے مشوروں کی روشنی میں ہماری سرگرمیاں جاری ہیں۔
اسٹیج پر پروفیسر اعجاز علی ارشد(وائس چانسلر مولانا مظہر الحق عربی وفارسی یونیورسیٹی ونائب صدر بہار اردو اکادمی) ، محترمہ عذرا نقوی ،محترمہ ثروت خاں جلوہ افروز تھے۔ محترمہ ڈاکٹر شگفتہ یاسمین کی چوتھی تصنیف ’’ کشفِ ذات ‘‘کا رسم اجراء معزز مہمانوں کے دست مبارک سے ہوا۔ محترمہ ڈاکٹر شگفتہ یاسمین کی اس سے قبل تین کتابیں منظر عام پر آگئی ہے جس میں سب ورق تیری یاد کے (سفر نامہ)، پانی سے مانجھی تک (تنقید کے آئینے میں )، اور تیسری کتاب اردو مجلّا تی صحافت اور غیر ملکی ادارے ، شامل ہیں۔
kashf e zaat rasm ajra 3محترمہ ڈاکٹر شگفتہ یاسمین بے حد فعال اور سنجیدہ اسکالر ہیں جو اردو ادب کی نئی جہتوں کی تلاش و جستجو میں کوشاں ہیں۔ وہ ایک کامیاب ٹی وی اینکر، ایک سنجیدہ شخصیت کی مالک اور غیر معمولی طور پر ذہین مصنفہ ہیں۔ ان کی تحریروں میں معروضیت اپنے عروج پر دکھائی دیتی ہے اور وہ متعلقہ موضوع پر اپنی بے باک اور سلجھی ہوئی رائے کے اظہار کا فن جانتی ہیں۔ انہیں دور جدید میں اردو زبان و ادب کے تقاضوں کا بھی ادراک ہے اور وہ انہیں پورا کرنے کے فن سے بھی آگاہ ہیں۔ اس سے قبل موصوفہ کی تین کتابیں منظر عام پر آئی ہے۔ پیش نظر کتاب موصوفہ کی چوتھی کتاب ہے۔ محترمہ ڈاکٹر شگفتہ یاسمین فی الحال سینئر فیلو کے طور پر حکومت ہند کی وزارتِ ثقافت کی جانب سے تفویض کردہ تحقیقی کام میں مصروف ہیں۔ کتاب کے رسم اجراء تقریب کے موقع پر کرناٹک اردو اکادمی کی صدر ڈاکٹر فوزیہ چودھری محترمہ ثریا جبیں ،ڈاکٹر مسرت جہاں ،محترمہ رضوانہ پروین ،محترمہ رحمت یونس ،محترمہ فرح ناز،محترمہ فرحت ،محترمہ ذکیہ مشہدی‘ محترمہ عذرا نقوی ،محترمہ قمر جہاں ، محترمہ تسنیم کوثر ، پر وزیر محترم اور دیگر اہم شخصیات موجود تھی۔ افتتاحی اجلاس کا اختتام جناب سلطان اختر نائب صدر اکادمی کے اظہار تشکر کے ساتھ ہوا۔

اردو قومی کنونشن میں ڈاکٹر شگفتہ یاسمین کی تصنیف’’ کشف ذات ‘‘کا اجراء کرتے ہوئے وزیر اقلیتی فلاح ڈاکٹر عبدالغفار ، مولانا مظہر الحق ،پروفیسر اعجاز علی ارشد، سلطان اختر،عذرا نقوی ،ڈاکٹر شگفتہ یاسمین،تسنیم کوثر و دیگر۔

اردو قومی کنونشن میں ڈاکٹر شگفتہ یاسمین کی تصنیف’’ کشف ذات ‘‘کا اجراء کرتے ہوئے وزیر اقلیتی فلاح ڈاکٹر عبدالغفار ، مولانا مظہر الحق ،پروفیسر اعجاز علی ارشد، سلطان اختر،عذرا نقوی ،ڈاکٹر شگفتہ یاسمین،تسنیم کوثر و دیگر۔

929 total views, 2 views today

Short URL: //tinyurl.com/zvwh7dv
QR Code:
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *