لندن: مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے بھا رتی رویہ اقوام عالم میں جمہو ری قوتوں کے نام پر ایک کلنگ کا ٹکہ ہے: الائنس گوہر الماس خان

Print Friendly, PDF & Email

 لندن (پ ر) شہدا ء جمو ں و کشمیر کی قربا نیا ں تا ریخ میں سنہری حروف سے لکھی جا ئیں گی ، مسئلہ کشمیر کا حل کشمیری حکمرانو ں کی عدم توجہ کے باعث التوا ء کا شکا ر ہے ۔ ان خیالا ت کا اظہا ر ممتا ز بر طا نوی سکا لر اور سیکرٹری جنرل سا ؤتھ لیڈز کمیونٹی الا ئنس گو ہر الما س خان نے یو م شہدا ء جمو ں کے حوالہ سے بر طانیہ میں بسنے وا لے کشمیر ی تا رکین وطن سے خصوصی گفتگو کرتے ہو ئے کیا ۔ انہو ں نے کہا کہ کشمیری قوم گذ شتہ نصف صدی سے زائد عرصہ سے غلا می کی زنجیروں میں جکڑی ہو ئی ہے اگر آج بھی بھا رتی دہشتگردوں نے کشمیرکو آزاد نہ کیا تو مقبوضہ کشمیر کو بھا رتی افواج کے لیے جہنم کا گڑھ بنا دیں گے ۔ جب تک کشمیری حکمران اپنی قوم کے سا تھ مخلص نہ ہو ں گے اور سیاسی و ذاتی مفادات کو پس پشت نہ ڈا لا جا ئے گا تو یہ مسئلہ جو ں کا تو ں ہی رہے گا ۔ کشمیری اقتدار پسندوں نے جتنا تحریک آزادی کو نقصا ن پہنچا یا ہے اتنا تو بھا رتی افواج اور دہشتگردوں نے بھی نہیں پہنچا یا ہے ۔مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے بھا رتی رویہ اقوام عالم میں جمہو ری قوتوں کے نام پر ایک کلنگ کا ٹکہ ہے ۔ انہوں نے کہاکہ عالم اسلام نے کشمیری برادری کو ایسے تن تنہا چھوڑ دیا ہے جیسے حضرت امام حسینؓ کو ان کے مصلحت پسند نام نہا د دوستو ں نے چھوڑ دیا تھا ۔ دنیا میں امن اور انسانی حقوق کی با ت کرنے والی بین ا لا قوامی تنظیما ت اور اداروں کو چا ہیے کہ مقبوضہ کشمیر میں ڈھا ئے جانے وا لے ظلم و بربریت اور تشدد کو رکوانے میں بھر پو ر کردار ادا کریں ۔ انہو ں نے مزید کہاکہ یو م شہداء جمو ں تجدید عہد کا دن ہے ان لازوال شہداء سے جنہو ں نے اپنے محبوب وطن کی خاطر اپنی قیمتی جا نیں بھی نچھا ور کر دیں لیکن اپنے فطر ی حق پر کبھی کوئی سمجھو تہ نہیں کیا ۔ پوری کشمیر ی قوم کو چا ہیے کہ شہداء جمو ں کی پیروی کرتے ہوئے اپنے وطن کی آزادی اور خو د مختا ری کے لیے اپنی اپنی بساط کے مطا بق عملی زندگی میں جد وجہد کریں اور جو لو گ کشمیر کے نام پر دنیا کو دھوکا دینے میں مصروف عمل ہیں انکا راستہ روکیں ۔مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے تمام سپر طا قتیں ثا لثی کا کردار ادا کرتے ہو ئے اس کو حل کی طرف لیجا ئیں تا کہ آئندہ کوئی یوم شہدا ء جمو ں جیسا تا ریخی سانحہ رونما نہ ہو سکے ۔

 1,290 total views,  4 views today

Short URL: http://tinyurl.com/zqt2tjq
QR Code:
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *