جلدی نہیں اٹھ سکتے توپھرکیا ہوا گوگل ہے نا

Print Friendly, PDF & Email

کسی سوال کا جواب چاہیے، کہیں جانے کا راستہ معلوم نہیں، کسی چیز کا بھاؤ معلوم کرنا ہے، یا کوئی چیز خریدنی ہے، گوگل حاضر ہے۔ ہماری زندگی کا وہ کون سا کام ہے جس میں گوگل مدد فراہم نہیں کرتا۔ تو یہ کیسے ہو سکتا تھا کہ صبح آپ کو بروقت جگانے، اور آپ کے کمرے کے ساتھ دماغ کی بھی بتی جلانے میں گوگل کسی طرح پیچھے رہ جاتا۔

تو اگر آپ بھی اُن لوگوں میں شامل ہیں جنہیں صبح وقت پر بیدار ہونا پہاڑ جیسا مشکل دکھائی دیتا ہے تو اب مزید پریشان ہونے کی ضرورت نہیں، بس گوگل کے اس نئے اسسٹنٹ کو اپنی زندگی کا حصہ بنا لیجئے۔

ضرور پڑھیں: ”گورنر ہاﺅس کی دیواریں گرادیں تو جماعت اسلامی ’امریکہ مردہ باد ‘ کہاں لکھے گی“ اس سوال کے جواب میں اینکر پرسن نے ایسا جواب دے دیا کہ آپ بھی ہنس ہنس کر بے حال ہوجائیں گے
گوگل کی جانب سے یہ نیا اسسٹنٹ متعارف کروایا جا چکا ہے جو لوگوں کو زندگی کی روٹین درست رکھنے میں حیرت انگیز مدد فراہم کرتا ہے۔

آپ نے کس وقت جاگنا ہے ، کس وقت لائٹس آن ہونی چاہیں، کس وقت آپ میوزک سننا چاہتے ہیں ، کس وقت آپ سونا چاہتے ہیں ، یہ اس طرح کے ہر معاملے میں آپ کی معاونت کرے گا۔ اسے اینڈرائیڈ صارفین کیلئے متعارف کروایا جا چکا ہے اور کلاک ایپ کے ذریعے اس کا استعمال کیاجا سکتا ہے۔

اس اسسٹنٹ کے ذریعے آپ ایک ہی کمانڈ کو استعمال کرتے ہوئے متعدد اقسام کے ٹاسک سیٹ کر سکتے ہیں۔

مثال کے طور پر آپ اسے صرف یہ کہیں ’’ گوگل ، گڈ مارننگ ‘‘تو یہ آپ کے کمرے کی لائٹس آن کر دے گا ، کافی مشین آن کردے گا ، اور آپ کو خبریں پڑھ کر سنانا شروع کر دے گا۔

آپ جس ایپ کے ذریعے الارم لگاتے ہیں اسی میں آپ کو ’’گوگل اسسٹنٹ روٹین‘‘ کی آپشن بھی دستیاب ہوگی۔

اسے آپ گھر کے مختلف قسم کے آلات کے ساتھ منسلک کر سکتے ہیں جس کے بعد یہ آپ کی روٹین کو دیکھتے ہوئے سمجھ جائے گا کہ کس وقت لائٹیں آن کرنی ہیں ، کس وقت میوزک آن کرنا ہے ، کس وقت ٹی وی اور کافی مشین آن کرنی ہے ،

کس وقت آپ کو انٹرنیٹ کی مختلف ویب سائٹوں سے آپ کی مرضی کا مواد اکٹھا کر کے دکھانا ہے ، وغیرہ وغیرہ۔یہ مصنوعی ذہانت سے لیس سافٹ ویئر ہے جو آپ کی روز مرہ کی عادات کا خود بھی اندازہ لگا سکتا ہے اور ضروری نہیں کہ ہر بات کی کمانڈ دینا پڑے یہ بہت سی باتوں کو خود بھی سمجھ لیتا ہے۔

36 total views, 3 views today

Short URL: http://tinyurl.com/yclpf3pm
QR Code:
انٹرنیٹ پہ سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضامین
loading...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *